اتوار, مئی 26, 2024
spot_img
ہومخبریںکیچ: آزاد امیدوار کے بجائے پیپلزپارٹی کے امیدوار کو ترجیح دی ہے،...

کیچ: آزاد امیدوار کے بجائے پیپلزپارٹی کے امیدوار کو ترجیح دی ہے، ضلعی کونسل میں عددی اکثریت کا بھی دعویٰ۔ دشتی برادران/ کیچ یکجہتی کمیٹی

دشتی فیملی، کیچ یکجہتی کمیٹی اور پی این پی عوامی نے 21 ارکان کے ساتھ ضلع کونسل کیچ کے چیئرمین کے الیکشن میں پاکستان پیپلزپارٹی کی حمایت کا اعلان کردیا، وائس چیئرمین کے امیدوار دشتی فیملی کے میر باہڑ جمیل دشتی ہوں گے۔ 65 سے70 ارکان کی حمایت دعویٰ۔

یہ اعلان دشتی فیملی کے سربراہ میجر جمیل احمد دشتی، کیچ یکجہتی کمیٹی کے سربراہ سابق سینیٹر میر اسلم بلیدی، پاکستان نیشنل پارٹی عوامی کے مرکزی سنیئرنائب صدرمیر غفور بزنجو نے میرباہڑ دشتی ہاؤس تربت میں ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

پریس کانفرنس میں پاکستان پیپلزپارٹی کے نامزد امیدوار میرہوتمان بلوچ، سابق صوبائی وزیرمیر ظہور بلیدی، میر عبدالرؤف رند، میر اصغررند، ڈاکٹربرکت بلوچ، حاجی میر عبدالرسول بلوچ، حاجی قدیر احمد بلوچ، میر زبیررند، میر آصف علی رند، معتبر خلیل رند، چوہدری عبدالرشیدرند، خلیل الفت، ایوب طلب، خلیل تگرانی، احدالہٰی، دشتی فیملی کے سرکردہ شخصیات میر قاسم دشتی، میر باہڑجمیل دشتی، نذیر احمدکلگی ایڈووکیٹ، تاج بشیر رند، عبدالواحد دشتی، موسیٰ دشتی، پاکستان نیشنل پارٹی عوامی کے رہنما سید تیمورشاہ، خان محمدجان، اسفند یاربزنجو، التازسخی، شاہد گچکی، عبدالغفور کٹور، جیہند علی سمیت دیگر شخصیات و کارکنان کثیر تعداد میں شریک تھے۔

دشتی فیملی کے سربراہ میجر جمیل احمد دشتی نے کہاکہ بلدیاتی الیکشن کے آخری مرحلہ میں ضلع کونسل کیچ کے چیئرمین کے چناؤ میں ایک طرف آزاد امیدوار اور دوسری طرف پاکستان کی بڑی جمہوری و پارلیمانی جماعت پاکستان پیپلزپارٹی کے امیدوار میدان میں ہیں ہم نے طویل غوروخوض اور باہمی مشاورت کے بعد آزاد امیدوار کے بجائے پاکستان پیپلزپارٹی کی حمایت کو ترجیح دی ہے، ہمارے پینل میں ضلع کونسل کیچ کے 21ارکان ہیں جن میں دشتی فیملی کے 10 ارکان، کیچ یکجہتی پینل کے 7 اور پی این پی عوامی کے 4ارکان ہیں۔ 21چیئرمینوں کے ساتھ پیپلزپارٹی کی مکمل اور بھرپور حمایت کرتے ہیں۔

کیچ یکجہتی کمیٹی کے سربراہ سابق سینیٹر میر اسلم بلیدی نے کہاکہ بلدیاتی الیکشن کے دوسرے مرحلہ میں بی این پی، کیچ یکجہتی کمیٹی اور سید احسان شاہ کا اتحاد ہواتھا اور یہ طے ہواتھا کہ بلدیاتی الیکشن کے آئندہ مراحل میں بھی متفقہ طور پر فیصلے کئے جائیں گے اس دوران ہمارے اتحاد کو توڑنے اور دراڑ ڈالنے کی کافی کوششیں کی گئیں مگر اتحاد کے اندر مکمل ہم آہنگی کے باعث سازشیں ناکام ہوئیں، اب بلدیاتی الیکشن کے آخری مرحلے میں اتحاد نے طویل غوروخوض اور مشاورت کے بعد انفرادی یا آزاد امیدوار کے بجائے ایک سیاسی پارٹی اور سیاسی پروگرام کو سپورٹ کرنے پر اتفاق کیا جو ضلع اور سماج کے بہتر مفاد میں ہے کیونکہ غیر سیاسی عناصر کا راستہ روکنے کے دعویداروں نے ایک ایسے شخص کو اپنا امیدوار نامزد کیا ہے جس کی نہ سیاسی پس منظر ہے نہ علمی و ادبی اور سماجی حوالے سے کوئی شناخت ہے جو عوام کو اندھیرے میں رکھنے کے سوا کچھ بھی نہیں۔

انہوں نے بی این پی کے چند ساتھیوں کی جانب سے اس فیصلہ کی حمایت نہ کرنے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ان کی جدائی کا افسوس تو ہے مگر اکثریت ہمارے ساتھ ہے، انہوں نے کہاکہ جس طرح ہمیں ابتداء میں کہاگیاتھا کہ نیشنلسٹ اور سیاسی کیڈر کو میدان میں اتارا جائے گا اگر اس پر عمل ہوتا تو شاید ہم سیاسی کیڈر کے ساتھ ہوتے اس لئے بدلتی ہوئی صورتحال میں پیپلزپارٹی کی حمایت قدرے بہتر فیصلہ ہے۔

پاکستان نیشنل پارٹی عوامی کے مرکزی سنیئرنائب صدر میر غفوراحمدبزنجو نے کہاکہ آج ہمارے اتحاد کی جانب سے پیپلزپارٹی کی حمایت کے بعد پوزیشن بہت واضح ہوگئی ہے اور 6جولائی کو میر ہوتمان بلوچ اور میرباہڑ جمیل دشتی کی جیت یقینی ہوچکی ہے۔ پیپلزپارٹی کے سنیئر رہنما میر ظہور احمدبلیدی نے کہاکہ تینوں جماعتوں کے اتحاد کی حمایت کے بعد ہمارا پینل اب سب سے مضبوط پینل بن چکی ہے، ضلع کونسل کیچ کے100 ارکان میں سے 65 سے 70 ارکان کی حمایت پیپلزپارٹی کے امیدوار کو حاصل ہے اور مزید حمایت حاصل کرنے کیلئے کوششیں جاری ہیں۔ آخر میں ضلع کونسل کیچ کے نامزد چیئرمین میرہوتمان بلوچ، نامزد وائس چیئرمین میر باہڑجمیل دشتی، میر عبدالرؤف رند ودیگر نے تمام شرکاء کا شکریہ اداکیا۔

متعلقہ مضامین

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

تازہ ترین