اتوار, مئی 26, 2024
spot_img
ہومبلوچستانکوئٹہ: مرکز سات دہائیوں سے بلوچستان کے حقوق پر ڈاکہ ڈال رہی...

کوئٹہ: مرکز سات دہائیوں سے بلوچستان کے حقوق پر ڈاکہ ڈال رہی ہے، 2023 کی مردم شماری میں آبادی پر کٹ لگاکر حقوق غضب کرنے کا تسلسل جاری رکھا۔ سردار اختر مینگل

ممتاز قانون دان راجہ جواد ایڈوکیٹ نے سردار اختر جان مینگل کی قیادت پر اعتماد کرتے ہوئے اپنے عزیز و اقارب و ساتھیوں سمیت پریس کانفرنس میں بلوچستان نیشنل پارٹی میں شمولیت اختیار کی، پریس کانفرنس میں پارٹی کے سربراہ سمیت مرکزی کابینہ سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے ممبران اور ضلعی کابینہ کوئٹہ کے دوست بھی موجود تھے۔

سردار اختر مینگل نے پریس کانفرنس میں کہا کہ بلوچستان کے حقوق پر سات دہائیوں سے ڈاکہ مارا جا رہا ہے، بلوچستان کے حقوق دیئے بغیر انسرجنسی کبھی ختم نہیں ہوگی اور بلوچستان میں اسی طرح آگ اور خون کی ہولی جاری رہیگی۔

انہوں نے کہا کہ مرکز نے ہمیشہ بلوچستان کی کم آبادی کا جواز پیش کرکے حقوق غضب کیئے مگر 2023 کی مردم شماری میں بلوچستان کی تمام جماعتوں نے دن رات محنت کرکے تمام تر چیلنجز کے باوجود اپنے آبادی کو رجسٹر کیا جسے سی سی آئی نے مسترد کردیا اور ستّر لاکھ کی آبادی کاٹ دی جوکہ حقوق پر ڈاکہ مارنے کا تسلسل ہے۔ انہوں نے کہا بلوچستان کیساتھ یہی رویہ جاری رہا تو یہاں کبھی امن نہیں ہوگی اور دہشتگردی کا خاتمہ نہیں ہوگا۔

متعلقہ مضامین

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

تازہ ترین