اتوار, مئی 26, 2024
spot_img
ہومجھلوانوڈھ: جنگ بندی ٹوٹنے پر قبائلی لشکر کے مابین تین روز سے...

وڈھ: جنگ بندی ٹوٹنے پر قبائلی لشکر کے مابین تین روز سے تصادم جاری، قومی شاہراہ سفر کیلئے معطل، قیمتی جانوں کے ضیاع کا خطرہ

خضدار کے علاقے وڈھ میں سردار اسد اللّٰہ خان مینگل اور شفیق الرحمان مینگل کی ایک دوسرے پر لشکر کشی جاری ہے، قبائلی مسلح افراد کے مابین تین روز سے فائرنگ کا تبادلہ چل رہا ہے۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب سے جنگ میں تیزی لائی گئی ہے جس سے آبادیوں پر بھی گولہ باری کی جارہی ہے، کئی قیمتی جانوں کے ضائع ہونے کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق جنگ کی شدت کے پیش نظر کوئٹہ کراچی قومی شاہراہ وڈھ کے مقام پر آمد و رفت کیلئے بند کردیا گیا ہے۔ ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے تاہم انتظامیہ یا ریاستی فورسز براہ راست مداخلت کرنے سے گریزاں ہیں۔

یاد رہے اس سے قبل جنگی صورتحال پیدا ہوگئی تھی جس پر نواب محمد اسلم رئیسانی نے مداخلت کرکے دونوں فریقین کے مابین جنگ بندی کا معاہدہ کروا دیا تھا مگر نامعلوم وجوہات کی بناء پر جنگ بندی ٹوٹ گئی ہے اور دوبارہ تصادم جاری ہے۔ اس دوران نواب رئیسانی کی جانب سے اب تک کوئی موقف سامنے نہیں آئی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

تازہ ترین