اتوار, مئی 26, 2024
spot_img
ہومبلوچستانتربت: ڈی بلوچ پوائنٹ ایم ایٹ شاہراہ دوسرے روز بھی بلاک، دھرنا...

تربت: ڈی بلوچ پوائنٹ ایم ایٹ شاہراہ دوسرے روز بھی بلاک، دھرنا جاری، مند تمپ بجلی بحالی تک احتجاج جاری رکھنے کا عندیہ

مند اور تمپ کے عوام کے ساتھ کیسکو کی زیادتی کے خلاف دھرنا دوسرے روز بھی جاری، ضلعی انتظامیہ کے ساتھ مزاکرات کا دوسرا دور بھی ناکام، مظاہرین کا علاقے میں معمول کے مطابق بجلی کی بحالی تک احتجاج جاری کا اعلان۔

تمپ اور مند کے مکینوں کی جانب سے حق دو تحریک کے تعاون سے تربت میں ڈی بلوچ پوائنٹ پر دھرنا دوسرے روز بھی جاری ہے، بدھ کو احتجاج کے دوسرے دن جہاں مند اور تمپ کے عوام مقامی لوگوں کے ساتھ دھرنا دے رہے ہیں وہاں یکجہتی کے لیے بی این پی کے مرکزی رہنما جہان زیب بلوچ، میر حمل، سیاسی شخصیت نیاز کیازئی، پیپلز پارٹی مکران ڈویژن کے صدر ڈاکٹر برکت بلوچ، سابق ایم این اے میر یعقوب امام بزنجو، ڈسٹرکٹ چیئرمین میر ہوتمان، نیشنل پارٹی کے رہنما ڈاکٹر مبارک علی، پی پی کے رہنما میر اصغر رند، پی پی کے رہنما خلیل احمد تگرانی اور دیگر سیاسی شخصیات بھی گئے اور مظاہرین کے مطالبات کی حمایت کی۔

بدھ کو حق دو تحریک کے سربراہ مولانا ھدایت الرحمن، حسین واڈیلا، یوسی گیاب مند کے چیئرمین حاجی محمد نور، حاجی مجیب کیازئی، حاجی حنیف، ڈاکٹر اسماعیل بلیدی، وسیم سفر و دیگر نے دھرنا کی قیادت کی۔

دھرنا کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے بی این پی کے مرکزی رہنما جہاں زیب بلوچ نے کہاکہ کیسکو اپنے آئینی حدود سے باہر نکل کر لوگوں کو اجتماعی ازیت دینے کا باعث بن رہی ہے اس کا یہ رویہ کسی طرح قابل قبول نہیں ہے، انہوں نے کہاکہ ملک کے ایک ادارے کو قوانین کی پاسداری کرکے لوگوں کو سہولت فراہم کرنا چاہیے مگر یہ ادارہ اپنی من مانی پر اتر آیا ہے۔

دھرنا سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی مکران ڈویژن کے صدر ڈاکٹر برکت بلوچ نے کہاکہ ھم اپنے عوام کو کسی مشکل وقت میں اکیلے نہیں چھوڑ سکتے، کیسکو کو چاہیے کہ وہ مند اور تمپ میں بجلی کا مسلہ کسی کشیدگی سے پہلے حل کرے۔

ڈسٹرکٹ چیئرمین میر ہوتمان نے کہاکہ بجلی کے مسلے پر علاقے کے نمائندوں سے کامیاب مذاکرات کرکے آٹھ گھنٹے روزانہ بجلی کی فراہمی پر اتفاق کیا لیکن بعد میں دھرنا شروع کیا گیا ابھی بھی کیسکو کے ساتھ ہماری بات چیت چل رہی ہے ہم کوشش کررہے ہیں کم سے کم نکات پر اتفاق پیدا کرکے دھرنا ختم کرسکیں تاکہ لوگوں کو مذید مشکلات کا سامنا نہ ہو۔

یاد رہے کہ دو دنوں سے مسلسل ایم ایٹ شاہراہ کی بندش کے سبب مسافروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، تربت سے گوادر، پسنی، اورماڈہ، حب اور کراچی جانے والے سیکڑوں مسافر راستہ بند ہونے کے باعث رل گئے اسی طرح تمپ، ناصر آباد اور دشت روٹ پر چلنے والی لوکل ٹریفک بھی دھرنا کے باعث شدید متاثر رہی۔

دریں اثناء ڈپٹی کمشنر کیچ حسین جان بلوچ اور ڈسٹرکٹ چیئرمین میر ہوتمان نے بدھ شام ایک دفعہ پھر دھرنا گاہ جاکر مزاکرات کی کوشش کی مگر انتظامیہ اور مظاہرین کے درمیان طویل بات چیت کے بعد بھی مزاکرات سودمند نہ ہوسکے اور دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کیا گیا۔

متعلقہ مضامین

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

تازہ ترین