بدھ, مئی 22, 2024
spot_img
ہومبلوچستانتربت: انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کیخلاف نیشنل پارٹی کی کال پر...

تربت: انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کیخلاف نیشنل پارٹی کی کال پر تربت میں شٹرڈاؤن ہڑتال، کاروباری مراکز بند

عام انتخابات 2024 میں مبینہ ٹھپہ ماری اور انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کے خلاف نیشنل پارٹی کیچ میں 9 فروری سے مسلسل احتجاجی مظاہرے کررہی ہے اور الزام  عائد کیا جارہا ہے کہ سرکاری مشینری کے زور پر انتخابی نتائج تبدیل کردیئے گئے ہیں۔

 پارٹی کے مرکزی صدر ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے گزشتہ روز شہید فدا احمد چوک پر جاری مظاہرے سے اعلان کیا کہ تربت میں شٹرڈاؤن ہڑتال ہوگی اور آئیندہ مزید سخت لائحہ عمل طے کرکے شاہراہوں کو بھی بلاک کیا جائیگا۔ 

حالیہ انتخابات میں بلوچستان بھر سے دھاندلی اور نتائج کی تبدیلی کے الزامات عائد کیئے جارہے ہیں جسکے ردعمل میں بلوچستان بھر میں مظاہرے کیئے جارہے ہیں۔ کیچ میں نیشنل پارٹی کے امیدواران حلقہ پی بی 25 سے جان بلیدئی، پی بی 28 سے میر حمل بلوچ اور پی بی 27 سے لالا رشید دشتی کی نشستیں مخالفین کو مبینہ دھاندلی کے تحت سونپ دی گئی ہیں۔ جبکہ این اے 259 کی نشست پر نیشنل پارٹی ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کی کامیابی کا دعویٰ کررہی ہے جسے ملک شاہ نامی غیر معروف شخص کو دیا گیا ہے۔ 

نیشنل پارٹی نے اپنے پالیسی بیان میں حالیہ انتخابات میں افسران کی مداخلت اور جانبداری کو جمہوریت دشمنی قرار دیتے ہوئے مقتدرہ کو خبردار کیا ہیکہ ان اعمال کے سنگین تنائج مرتب ہونگے جوکہ ملک کیلئے کسی طور نیگ شگون نہیں ہے۔ انہوں نے عوامی مینڈیٹ کے دفاع میں ہر حد تک جانے کا اعائدہ بھی کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

تازہ ترین