بدھ, مئی 22, 2024
spot_img
ہومبلوچستانبلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن (شال زون ) کی جانب سے ۲ مئی کو...

بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن (شال زون ) کی جانب سے ۲ مئی کو شہید فدا احمد بلوچ ڈے پر تعزیتی ریفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ 

بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن (شال زون ) کی جانب سے ۲مئی بروز جمعرات بمقام لہڑی گیٹ بنام “شہید فدا احمد بلوچ “ ایک تعزیتی ریفرنس کا انعقاد کیا گیا جس کے مہمان خاص سابق چیئرمین چنگیز بلوچ، سعید لہڑی سمیت دیگر عوامی رہنما تھے جس کی صدارت مرکزی چیئرمین جیئند بلوچ نے کی۔

ریفرنس کا آغاز راجی سوت، شہدا بلوچستان سمیت دیگر انقلابی رہنماوں کی یاد میں دو منٹ کی خاموشی سے کیا گیا جس کو آگے بڑھاتے ہوئے شہید فدا احمد بلوچ کی زندگی، نظریات اور ان کی شہادت پیش نظر رہے۔

مقررین نے پروگرام کو آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ شہید فدا احمد بلوچ تربت کے علاقے کوشک میں جنم پاتے ہیں بچپن سے ہی سماجی حالات قائل کردہ ضرورتوں کی وجہ سے سیاست میں اپنا قدم بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن سے رکھا اور آگے بڑھتے ہوئے ۱۹۷۸ میں سیکریٹری جنرل کے عہدہ پہ فائز ہوئے۔

ساتھیوں نے مزید کہا کہ ۲ مئی کو بلوچ و بلوچستان کے دیگر علاقوں میں ایک ایسے لیڈر کو یاد کرنا باعث فخر ہے جنہوں مختصر عرصے میں بلوچ سمیت خطہ کی دیگر طاقتوں کو متاثر کیا ہمہ وقت ان کے نظریات کو اون نہ کرنا بلکہ کچلنا بلوچ سیاسی گروہوں کی کم عقلی ہے۔

شہید وطن نے اپنی طلبا سیاست ( بی ایس او) میں ہی ایک ماس پارٹی کا کردار بھی ادا کیا جب نیپ کو کالعدم کردار دیا جا چکا تھا یا پابند سلاسل کیا گیا تھا اسی کے ساتھ ساتھ شہید وطن نے نہ صرف بلوچ بلکہ دیگر محکوم و مظلوم اقوام کے لئے آواز اٹھائی۔

مرکزی چیئرمین نے آخری میں کہا کہ “ آج شہید وطن کے نظریے کو کسی پروگرام میں ڈسکس نہیں کیا جارہا ان کا مقصد آج فقط نظریات کو کچلنا ہے جس کے لئے ریاستی اداروں کے ہتھکنڈے بھی شہید وطن کے نام سے تعزیعتی ریفرنسز کر رہے ہیں۔

پروگرام کا اختتام شہید وطن سمیت دیگر انقلابیوں کی یاد میں اشعار سے کیا گیا اور شہیدوں کو سرخ سلام پیش کیا گیا۔

متعلقہ مضامین

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

تازہ ترین